51

’’ آپ فرید کورٹ جانا چاہتی ہیں۔۔۔۔؟‘‘ نواز شریف نے معروف خاتون صحافی ’ کِم بارکر‘ کو کس طرح اور کیوں اجمل قصاب کے گاؤں بھیجا تھا؟ چکرا دینے والا انکشاف ہوگیا

لاہور( مانیٹرگ ڈیسک) ممبئی حملوں کے حوالے سے نواز شریف کے متنازعہ بیان کو لے کر نہ صرف پاکستان میںبلکہ پوری دنیا کیں ایک نئی بحث کا آغاز ہوچکا ہے۔ تاہم ممبئی حملوں کے بعد بین الاقوامی صحافی کم بارکر کو نواز شریف نے کس طرح فرید کورٹ بھیجا ؟ صف اول کے پاکستانی صحافی نے انکشاف کر دیا ۔ تفصیلات کے مطابق نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے سینئر صحافی کاشف عباسی کا کہنا تھا کہ پاکستان میں نان اسٹیٹ فیکٹرز یا گروپس کو نہیں ہونا چاہیئے، مسلح جتھے ہیں، بناےٓئے جاتے رہے ہیں اور انہیں استعمال بھی کیا گیا ہے، یہ وہی لوگ ہیں جو پہلے ہمیں کھاتے رہے اور آج دوسروں کے لیے کام کرتے ہوئے ہمارے ملک کو نقصان پہنچا رہے ہیں ۔ لیکن ایک سابق وزیر اعظم جس کے پاس ریاست کے بارے مٰن کافی معلومات ہوتے ہیں اسکا منصب یہ اجازت نہیں دیتا کہ وہ اطرح کی باتیں کرتا پھرے ۔ کاشف عباسی کا کہنا تھا کہ میاں صاحب پہلے تو متعدد بار دھمکیاں دے چکے ہیں اور ابکھل کر بولنا شروع ہوگئے ہین ۔ جس کے بارے میں وہ یہ بھی کہہ چکے ہیں کہ میرے سینے میں بڑے راز ہیں لہٰذا سدھر جائیں ۔ جبکہ مریم نواز بھی جے آئی ٹی کے باہر یہ کہہ چکی ہیں کہ انکے سینے مٰن بہت سے راز دفن ہین انکا منہ نہ کھلایا جائے۔ کیا پتہ کل کو نواز شریف باہر جا کر یہ راز بھی کھولنا شروع کر دیں کہ ہمارے نیوکلئیر پروگرامز کیا ہیں اور ہم انہیں کس طرح ڈیل کرتے ہیں۔ کاشف عباسی نے انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ انٹرنیشنل صحافی کم بارکر کو ایک دفعہ نواز شریف نے خود بلوایا، جب ” کیا آپ مجھ سے دوستی کرو گی ” والا سارا وقعہ پیش آیا ۔ اس وقت نواز شریف نے خود کم بارکر سے کہا کہ کیا آپ فرید کورٹ جہاں ے اجمل قصاب کا تعلق ہیں وہاں جانا چاہتی ہیں؟ تو کم بارکر نے جواب دیا کہ ہاں کیوں نہیں۔ اس وقت نواز شریف نے اپنے سیکرٹری کو کال کر کے بلایا اور اسے ہدایات جاری کیں کہ کم بارکر کو فرید کورٹ کا وزٹ کرایا جائے ۔، کاسشف عباسی کا اور کیا کہنا تھا؟ ویڈیو آپ بھی ملاحظہ کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں