140

کسی بادشاہ نے رسول اکرم ؐ کی خدمت میں ایک طبیب بھیجا کہ ضرورت کے وقت آ پ ؐ کی جماعت کاعلاج معالجہ کرے

سی بادشاہ نے رسول اکرمؐ کی خدمت میں ایک طبیب بھیجا کہ ضرورت کے وقت آپؐ کی جماعت کا علاج معالجہ کیا کرے۔طبیب مدتوں مدینے میں حاضر رہا مگر کسی شخص نے اس سے علاج کے لئے رجوع نہ کیا۔ حکیم مسلسل یہ بیکاری دیکھ کر آخر ایک دن آپؐ کی خدمت میں حاضر ہوا اور عرض کیا کہ “حضور جانتے ہیں کہ خاکسار اتنی مدت سے صرف آپؐ کے جانثاروں کی خدمت کے لئے موجود ہے۔ مگر اس عرصے میں میری طرف کسی نے بھی توجہ نہیں کی”حضور اکرمؐ نے فرمایا “ان لوگوں کا قائدہ یہ ہے کہ جب تک بھوک غالب نہ ہو، کھانے کو ہاتھ نہیں لگاتے۔ اور ابھی پیٹ بھرتا نہیں کہ ہاتھ اٹھا لیتے ہیں۔ اس لئے انہیں آپ کی خدمت سے فائدہ اٹھانے کا موقع کم ملتا ہے”۔حکیم نے کہا ” بے شک! تندرستی کا یہی اصل راز ہے۔ جس کے ہوتے ہوئے میری حاضری بیکار ہے”۔ اس کے بعد حکیم نے آداب بجالا کر وطن واپسی کی راہ لی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں